چلی کے صدر نے اسرائیلی حکومت کے سفیر کی اسناد مسترد کردیں

چلی صدر

چلی (پاک صحافت) چلی کے صدر نے اسرائیلی حکومت کے نئے سفیر گیل آرٹزیلی کی اسناد کو قبول کرنے سے انکار کرتے ہوئے مسترد کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چلی کی حکومت کے اس اقدام پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اسرائیلی حکومت کے حکام نے چلی کے صدر گیبریل بورک کی طرف سے اسرائیلی نمائندے کو مسترد کرنے کو سفارتی پروٹوکول کی صریح خلاف ورزی قرار دیا اور اسے دوطرفہ تعلقات کے لیے خطرہ قرار دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ارٹزیلی نے بوریک کو باضابطہ طور پر اپنی اسناد پیش کرنی تھیں، لیکن چلی کی حکومت نے انہیں مطلع کیا کہ یہ تقریب اسرائیلیوں کی طرف سے "غزہ میں بچوں کے قتل” کی وجہ سے منسوخ کر دی گئی ہے۔ تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ اس انکار کا مطلب اسرائیل کے ساتھ تعلقات ختم کرنا نہیں ہے بلکہ چلی کے حکام نے اسرائیلی حکومت کے سفیر کے استقبال کو مزید چند ماہ کے لیے ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں