جنسی استحصال کے متاثرین کا پاپ سے مداخلت کا مطالبہ

پاپ فرانسیس

نیوزی لینڈ (پاک صحافت) نیوزی لینڈ کیتھولک چرچ کے جنسی استحصال کے متاثرین نے پاپ سے اس معاملے میں مداخلت کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کیتھولک چرچ میں بچوں کے جنسی استحصال سے بچ جانے والوں کی نمائندگی کرنے والے نیوزی لینڈ کے ایک گروپ نے پاپ فرانسس سے معاوضے کے عمل میں مداخلت کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ چرچ کے اہلکاروں نے ان کے ساتھ بدسلوکی کی ہے اور متاثرین کو نقصان پہنچایا ہے۔

نیوزی لینڈ کے پادریوں کے مرکز برائے جنسی زیادتی کے شکار کے صدر کرسٹوفر لونگ ہارسٹ نے پاپ کو اپنے خط میں لکھا ہے کہ بدقسمتی سے، چرچ کا جو دفتر شفایابی کے لئے بنایا گیا ہے وہی پر زیادتی کی جاتی ہے۔ جبکہ مقامی کیتھولک چرچ کے رہنما عوامی طور پر بند دروازوں کے پیچھے شفا کی امید میں کھلے ہاتھ بڑھاتے ہیں، وہ اپنے طریقہ کار کو کمزور کرکے دوسری بار زندہ بچ جانے والوں کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں