امریکی ویب سائٹ: کیا واشنگٹن کو وضاحت کرنی چاہیے کہ اسے یوکرین کی مالی مدد سے کیا ملتا ہے؟

امریکہ

پاک صحافت ایک امریکی ویب سائٹ نے یوکرین کی جنگ کا موازنہ افغانستان میں امریکا کی موجودگی کے تجربے سے کیا ہے اور کہا ہے کہ واشنگٹن کو امریکی عوام کو بتانا چاہیے کہ یوکرین کو مالی امداد دینے سے اسے کیا فائدہ ہوگا۔

امریکی ویب سائٹ: کیا واشنگٹن کو وضاحت کرنی چاہیے کہ اسے یوکرین کی مالی مدد سے کیا ملتا ہے؟
فارس بین الاقوامی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکی ویب سائٹ "بزنس انسائیڈر” نے اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ یوکرین کے لیے ایک اور ڈالر مختص کرنے سے پہلے امریکی کانگریس کو اس ملک کے عوام کو بتانا چاہیے کہ یہ رقم امریکی مفادات کی ترقی کا باعث کیسے بنے گی۔

اس رپورٹ کے مطابق امریکہ نے یوکرین کی جنگ پر 100 بلین ڈالر سے زیادہ خرچ کیے ہیں۔ یہ رقم 2023 کے روسی فوجی بجٹ سے 16 بلین ڈالر زیادہ ہے۔

اس امریکی ویب سائٹ کا خیال ہے کہ امریکی کانگریس اس ملک کے لوگوں کی مقروض ہے کیونکہ اسے امریکیوں کو بتانا چاہیے کہ اس نے غیر وابستہ اتحادی کی قومی سلامتی پر 100 بلین ڈالر کیوں خرچ کیے؟

امریکی صدر جو بائیڈن نے پہلے ایک مسودہ قانون پر دستخط کیے تھے جس میں یوکرین کی مدد کے لیے مزید 47 بلین ڈالر مختص کرنے پر زور دیا گیا تھا۔

اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ تقریباً 14 بلین ڈالر صرف نئے ہتھیاروں کی خریداری پر خرچ ہوں گے، یہ ویب سائٹ سوال اٹھاتی ہے کہ امریکی کانگریس اس رقم سے کیا پیداوار کی توقع رکھتی ہے؟ یا دوسرے لفظوں میں اس رقم کا متوقع نتیجہ کیا ہوگا اور اس بات کو کیسے یقینی بنایا جائے کہ یہ سرمایہ کاری امریکہ کے لیے اچھی سرمایہ کاری سمجھی جائے۔

بزنس انسائیڈر بتاتا ہے کہ دو دہائیوں میں جب امریکہ افغانستان میں جنگ میں پھنسا ہوا ہے، واشنگٹن نے وہاں دو ٹریلین ڈالر کی طرح کچھ اڑا دیا ہے، جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ یہ ممکن ہے کہ کانگریس دیگر معاملات میں بھی ایسی پوزیشن میں ہو۔

اس امریکی ویب سائٹ نے یوکرین کو پیٹریاٹ سسٹم بھیجنے کی اہمیت کی مزید نشاندہی کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس اقدام سے یوکرین کے لیے کھیل کے اصول تبدیل نہیں ہوں گے۔

اس رپورٹ میں کہا گیا ہے: "ایک بیراج عام طور پر ایک نقطہ کا دفاع کر سکتا ہے؛ مثال کے طور پر، فائر بار میں یوکرین کے دارالحکومت کے ایک بڑے حصے کی حفاظت کا امکان ہوتا ہے۔ "لیکن یہ نظام پورے شہر کی حفاظت نہیں کرتا۔”

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں